ڈالرمہنگا ہونے کا سلسلہ جاری

ملک میں ڈالرمہنگا ہونے اور روپے کی بے قدری کا سلسلہ چوتھے روز بھی برقرار ہے۔

جمعرات کو ٹریڈنگ کے آغاز میں انٹربینک میں ڈالر2 روپے 7 پیسے مہنگا ہوگیا اور 227 روپے کی ریکارڈ سطح پر پہنچ گیا۔

درآمد کنندگان نے بتایا کہ امپورٹرز کو بینکوں سے ڈالرز نہیں مل رہے ہیں اور بینکس آج بھی امپورٹرز کو من مانی قیمت پر ڈالر بیچ رہے ہیں۔

انھوں نے بتایا کہ ڈالر کا بینک ریٹ 227 روپے مگر امپورٹرز کو 230 روپے میں بھی دستیاب نہیں۔

بدھ کو وفاقی وزیرخزانہ مفتاح اسماعیل نے اپنے ایک بیان میں روپے کی قدر میں بہتری کا امکان ظاہر کردیا اور کہا کہ بنیادی طور پر روپیہ ٹھیک ہے۔ انھوں نے یہ بھی کہا کہ مارکیٹ میں روپے پرزیادہ دباؤ نہیں ہے۔

ملک کی کرنسی مارکیٹ میں ڈالر کی قدر مسلسل بڑھ رہی ہے اور پاکستانی روپیہ ملکی تاریخی کی پست ترین سطح پرجا پہنچا۔

اقتصادی ماہرین کا کہنا ہے کہ پنجاب کے ضمنی انتخابات کے نتائج نے ملک میں ایک مرتبہ پھر سیاسی بے یقینی کی فضا پیدا کردی ہے اوراس کا اثر معاشی میدان پر بھی دیکھا جارہا ہے۔

اپنا تبصرہ بھیجیں