دعا زہرا کیس؛ ظہیر کیخلاف مبینہ جھوٹا سرٹیفکیٹ دینے پردرخواست دائر

دعا زہرا کے شوہر ظہیر کے خلاف لاہور ہائی کورٹ میں مبینہ جھوٹا سرٹیفیکیٹ جمع کرانے پر درخواست دائر کی گئی ہے۔

لاہور ہائی کورٹ ملتان بینچ میں دعا زہرا کے والد مہدی کاظمی نے احمد شیر جٹ ایڈووکیٹ کی وساطت سے درخواست دائر کی ہے۔

درخواست میں موقف اختیار کیا گیا ہے کہ ظہیر نے لاہور ہائی کورٹ ملتان بینچ سے 18 جولائی کو حفاظتی ضمانت کرائی لیکن عدالت سے چھپایا گیا کہ ظہیر لاہور ہائی کورٹ سے پہلے بھی حفاظتی ضمانت کرا چکا ہے۔

مہدی کاظمی کی جانب سے موقف اختیار کیا گیا کہ ظہیر کی جانب سے عدالت عالیہ میں جھوٹا سرٹیفکیٹ جمع کرایا گیا ، عدالت سے حقائق چھپانے پر ظہیر اور اس کا وکیل فراڈ کے مرتکب ہوئے ہیں۔

درخواست میں استدعا کی گئی ہے کہ ظہیر اور اس کے وکیل کی جانب سے حقائق چھپانے پر مناسب کارروائی شروع کی جائے اور ملزم ظہیر کی حفاظتی ضمانت واپس لی جائے۔

ظہیرکہاں ہے؟

کراچی پولیس نے جمعرات کے دن ظہیر کو سندھ اہئی کورٹ کے روبرو پیش کیا۔

سندھ ہائی کورٹ نے دعا زہرا کو کراچی لانے اور دارالامان منتقل کرنے کا حکم دیا ہے۔

عدالتی فیصلے میں کہا گیا کہ دعا زہرا کو کراچی منتقل کرنے میں کوئی قانونی رکاوٹ نہیں، بظاہر دعا شوہر کے ساتھ بھی ناخوش ہے اورساتھ رہنا نہیں چاہتی۔

اپنا تبصرہ بھیجیں