جس کیخلاف جہاد ہونا چاہیے وہ کہتا ہے ہم جہاد لڑرہے ہے، مولانا فضل الرحمان

سربراہ جمعیت علماء اسلام مولانا فضل الرحمان کا کہنا ہے کہ جس کیخلاف جہاد ہونا چاہیے وہ کہتا ہے ہم جہاد لڑرہے۔

بنوں میں پریس کانفرنس کے دوران مولانا فضل الرحمان کا کہنا تھا کہ عمران خان اپنی حدود میں رہو،جمعیت والے زندہ ہیں، آپ کیلئے زمین اتنی گرم کردیںگے کہ نرم تلوے نہیں رکھے جاسکیں گے۔

سربراہ پی ڈی ایم نے کہا کہ عمران خان کو آرام سے ایک لمحہ بھی نہیں گزارنے دیں گے، ہمیں ان کے آقاؤں کا پتا ہے، عمران خان کو اقتدار سے اتارنا پاکستان سے وفاداری ہے، تم اگر اقتدار میں آنے کی خواہش رکھتے ہو تو کبھی پوری نہیں ہوگی۔

سربراہ جمعیت علماء اسلام نے شہریوں سے اپیل کی کہ وہ عمران خان کا ساتھ نہ دیں بلکہ میدان میں آکر ملک کی وفادار قوتوں کا ساتھ دیں۔

مولانا فضل الرحمان کا کہنا تھا کہ آئین اور ملک کے ساتھ کھڑے ہیں اور یہ ہمارا جرم ہے، ملک میں ہمیشہ سیاسی استحکام کیلئے کردار ادا کیا،مزید کہا کہ اداروں کو طاقتور دیکھنا چاہتے ہیں، اداروں کے سخت فیصلوں سے اختلاف کیا اپنی رائے دی۔

مولانا فضل الرحمان کا کہنا تھا کہ وزیر اعظم شہباز شریف غیر ضروری شرافت دکھا رہے ہیں، وزیر داخلہ کو جگائیں اور انہیں حرکت میں لائیں ابھی بہت کیسز پڑے ہیں۔

آئی ایم ایف معاہدہ سے متعل مولانا فضل الرحمٰن نے کہا کہ حکومت کو آئی ایم ایف شرائط میں رکاوٹ ڈالنی چاہیے تھی، کرب کا شکار ہوں کہ کس طرح عام آدمی کو ریلیف دے سکیں۔

اپنا تبصرہ بھیجیں