تحریک انصاف اور ق لیگ کے بڑوں کی مشاورتی بیٹھک

وزیر اعلی ٰ پنجاب کے کل ہونے والے انتخاب کے سلسلے میں تحریک انصاف اور ق لیگ کے بڑوں کی مشاورتی بیٹھک ہوئی ، جس میں پرویز الہٰی ، اسد عمر، شاہ محمود قریشی ، شفقت محمود ، فرخ حبیب ، راجہ بشارت، سبطین خان ، میاں محمود الرشید، اسلم اقبال شریک ہوئے۔

مشاورتی بیٹھک میں دونوں جماعتوں کے اراکین کی حاضری پر اظہار اطمینان کیا۔ اور وزیر اعلی پنجاب کے ا لیکشن ڈے کی حکمت عملی پرمشاورت بھی ہوئی۔

پرویز الہیٰ

اس موقع پر چوہدری پرویزالہیٰ کا کہنا تھا کہ چھانگا مانگا کی سیاست کرنے والوں کو ناکامی ہوگی، ضمنی انتخاب میں عوام نے عمران خان پر اعتماد کیا، عوامی مینڈنٹ کو نقب لگانے کی کوئی کوشش برداشت نہیں کی جائے گی۔

اسد عمر

اسد عمر نے کہا کہ ایک ایک ووٹ پر پہرہ دیں گے اور کامیابی حاصل کریں گے، عمران خان کا کوئی ساتھی بکاو مال نہیں ہے، پنجاب میں پرویز الہیٰ وزیر اعلیٰ منتخب ہوں گے۔

شاہ محمود قریشی

ملاقات کے بعد مشترکہ پریس کانفرنس کرتے ہوئے تحریک انصاف کے نائب صدر شاہ محمود قریشی کا کہنا تھا کہ پنجا ب کی وزارت اعلی کے لئے جوڑ توڑ کا سلسلہ جاری ہے، آصف زرداری نوٹوں کے تھیلے لیکر پنجاب میں موجود ہیں، لیکن تمام ارکان پنجاب اسمبلی پارٹی کے نامزد امیدوار کو ووٹ دیں گے۔

شاہ محمود قریشی کا کہنا تھا کہ رانا ثناء اللہ کا بیان ان کی قیادت کے بیان کی نفی ہے، رانا ثناء اللہ کے پاس ضمیر خریدنے کی مہارت ہے، پہلے بھی 25 ضمیر خرید چکے ہیں، اور سینیٹ میں پیسوں سے یوسف رضاگیلانی کو منتخب کرایا گیا۔

اسد عمر

پی ٹی آئی کے رہنما اسد عمر کا کہنا تھا کہ پرانا پاکستان اب دفن ہوتا جارہا ہے، مصنوعی نظام کے دن پورے ہوتے جارہے ہیں۔

اسد عمر نے الزام عائد کیا کہ الیکشن کمیشن سیاست میں فریق بن چکا ہے، جو الیکشن کروارہا ہے اس پر قوم کا اعتماد ضروری ہے، 3 دن پہلے بارش کو جواز بناکر بلدیاتی الیکشن کو ملتوی کردیا گیا۔

اسد عمر نے کہا کہ فضل الرحمان کو چھپنے کیلئے کوئی جگہ نہیں مل رہی، پی ٹی آئی، ن لیگ اور پیپلزپارٹی کے فارن فنڈنگ کا فیصلہ اکٹھے سنایا جائے۔

اپنا تبصرہ بھیجیں